تازہ تریناسلامک کارنر

خانہ کعبہ کی حدود کے اوپر سے جہاز کیوں نہیں اڑ سکتے اصل وجہ کسی مسلمان کو بھی نہیں معلوم جان کر اپنی غلط فہمی کو دور کریں

یہ بات توہم سب ہی جانتے ہیں کہ خانہ کعبہ کے اوپر سے ہوائی جہاز نہیں گزرسکتے ، لیکن اسکی صحیح وجہ معلوم نہیں ہے۔آئیے آج کی اسٹوری میں ہم آپکو بتاتے ہیں کے کیوں مکہ مکرمہ کی فضائی حدود میں جہازوں نہیں اڑسکتے۔

سعودی پائلٹ عبداللہ صالح الغامدی کے مطابق مکہ مکرمہ کی فضائی حدود سے جہازوں کے نہ گزرنے کی واحد وجہ سعودی حکومت کی جانب سے اس روٹ کو اختیار کرنے پر پابندی کا عائد کرنا ہے۔
سعودی ہوابازی کے ماہر پائلٹ عبداللہ الغامدی کی جانب سے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر جاری ویڈیو پیغام میں سوشل میڈیا پر کیے جانے والے ان دعوؤں کو بے بنیاد قرار دے دیا گیا ہے۔ جن میں کہا گیا تھا کہ مکہ مکرمہ مقناطیسی فیلڈ کے مضبوط حصار میں ہونے کی وجہ سے شہرمقدس کی فضاوں میں کوئی جہاز نہیں اڑ سکتا۔پائلٹ الغامدی کا کہنا ہے کہ اس کی اصل وجہ کوئی مقناطیسی میدان نہیں بلکہ سعودی حکومت کی جانب سے حرم شریف کے تقدس کو مدنظر رکھتے ہوئے فضائی کمپنیوں کو جو روٹ دیا گیا ہے اس میں مکہ مکرمہ کی فضائی حدود میں داخل ہونے پر پابندی عائد کی گئی ہے۔

الغامدی کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی افواہیں غیرمعمولی طور پر مقبول ہوئیں جنہیں محض چند گھنٹوں میں 25 لاکھ سے زائد ویوز ملے۔انہوں نے ان باتوں کی تردید کرتے ہوئے وضاحت کی کہ اس حوالے سے پہلے بھی متعدد بار وضاحت کی جا چکی ہے کہ حرم شریف کے تقدس کے پیش نظر وہاں فضائی روٹ نہیں رکھا گیا۔فضائی روٹ نہ رکھنے کی دوسری وجہ بیان کرتے ہوئے الغامدی کا کہنا تھا کہ اس کی سائنسی وجہ یہ ہے کہ مکہ مکرمہ بلند وبالا پہاڑوں میں گھرا ہوا ہے جہاں ہوا کا دباؤ کافی ہوتا ہے۔ جب جہاز وہاں سے گزرتے ہیں تو ہوا کے دباؤ کی وجہ سے شور زیادہ ہو جاتا ہے جو مسجد الحرام میں موجود زائرین اورعازمین کے لیے باعث پریشانی ہوتا اسی لیے سعودی حکومت نے ان جہازوں کے گزرنے پر روک لگایا ہواہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button