پاکستان

بارہ سالہ بچے کے اغوا کے بعد قتل کا جرم تین ملزمان کو دو دو بار سزائے موت کا حکم

کراچی(این این آئی)انسداددہشت گردی عدالت نے بارہ سالہ بچے کے اغوا کے بعد قتل کا جرم ثابت ہونے پر تین ملزمان کو دو دو بار سزائے موت کا حکم دے دیا۔

منگل کوکراچی میں انسداد دہشتگردی عدالت میں بارہ سالہ بچے کے اغوا کے بعد قتل سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے تین ملزمان کو اغوا برائے تاوان اور قتل کے جرم میں دو دو بار سزائے موت کا حکم سنایا۔عدالت نے شواہد چھپانے کے جرم میں

تینوں ملزمان کو سات سال قید بامشقت کی سزا کے ساتھ ایک لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کیا۔انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ملزمان کو دو لاکھ روے فی کس مقتول کے ورثا کو ادا کرنے کا حکم بھی دیا۔

ملزمان میں شمشیر، سلمان اور عبدالستار شامل ہیں۔ تینوں ملزمان نے جنوری 2021 میں بلدیہ سعید آباد سے بارہ سالہ شاہد کو تاوان کے لئے اغوا کیا تھا۔

استغاثہ میں کہا گیا کہ ملزمان نے بچے کو قتل کرکے لاش کو جلا کر اسکیم 33 میں دفنا دی تھی۔

ملزم شمشیر بچے کا پڑوسی اور بچے کے والد کا دوست تھا۔ملزمان نے بچے کی رہائی کے لئے ایک کروڑ روپے تاوان مانگا تھا۔ ملزمان اور بچے کے والد کے درمیان 70 لاکھ روپے تاوان طے پایا تھا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button