پاکستان

سابقہ خاتون اول گھریلو خاتون ہیں تو غداری کے سرٹیفکیٹ بانٹ رہی ہے ،سیاسی خاتون ہوتیں تو ایٹم بن چلا دیتیں، تہلکہ خیز دعویٰ

لاہور( این این آئی)صوبائی وزراء ملک محمد احمد خان اور عطا اللہ تارڑ نے کہا ہے جب عمران خان کی کرپشن کی بات ہوتی ہے تو قومی سلامتی کے ادارے کے خلاف ہرزہ سرائی شروع کر دی جاتی ہے ، سابقہ حکومت میں کوئی بھی واردات 50کروڑ سے کم کی نہیں کی گئی ، فرح گوگی ، احسن جمیل اوربشری مانیکا ٹرائیکا کے سربراہ عمران خان ہیں کرپشن کا سارا پیسہ ان تک جاتا تھا،

فرح گوگی کے ریڈ وارنٹ جاری کر رہے ہیں ، فرح گوگی اور احسن جمیل گجر ایک گھنٹے میں وعدہ معاف گواہ بن جائیں گے ، آنے والے دنوں میں گھیرا تنگ کر رہے ہیں ،فرح گوگی اوربشری مانیکا کے خلاف بہت کیسز ہیں ،جس دن فرح گوگی آ گئی بشری بی بی بھی گرفتار ہوجائے گی،پنجاب میں جتنے گھپلے کئے ہیں ایک ایک قصہ سامنے آئے گا،ابھی سابقہ خاتون اول گھریلو خاتون ہیں اور غداری کے سرٹیفکیٹ بانٹ رہی ہے اگر یہ سیاسی خاتون ہوتیں تو ایٹم بن چلا دیتیں،عمران خان آپ جو کر رہے ہیں پاکستان کا برا کر رہے ہیں،پاکستان کی سیاست کا برا کر رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے 90شاہراہ قائد اعظم پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ۔ صوبائی وزیر قانون و پارلیمانی امور ملک محمد احمد خان نے کہا کہ عمران خان تین سال تک تواتر کے ساتھ قومی سلامتی کے ادارے کے سربراہ کے حوالے سے کیا کہتے رہے ، ایک پیج پر ہیں کی باتیں کی جاتی رہیں۔ جب تک ان کی حکومت قائم رکھنے میں کسی نہ کسی طرح مدد کی گئی جس کا اعتراف بھی کیا جا چکا ہے تب تک سب محب وطن تھے اور جب وہ غیر جانبدار ہو گئے تو ان کے خلاف ہر زہ سرائی شروع کر دی گئی ۔ عمران خان نے نیوٹرل ہونے کو گالی کے طور پر پیش کیا ۔

یہ واحد آدمی ہے جو کہتا ہے کہ میں امر بالمعروف اور باقی سب عنی عن المنکر کی کیٹگری میں کھڑے ہیں ۔انہوںنے کہا کہ جب عمران خان نے دیکھا کہ میری حکومت ختم ہو رہی ہے تو منصوبے سے فیصلہ کیا گیا کہ ایک ایسا بیانیہ چاہیے جس کو لے میں باہر نکلوں اور عوام کے پاس جائوں کہ مجھے اس لئے نکالا گیا ہے ،میرے خلاف سازش کی گئی ۔

انہوں نے کہا کہ کل سے سابقہ خاتون اول کی ٹیپ سوشل میڈیا پر وائرل ہے ۔ہمیں یہ کہا گیا کہ خاتون اول ہیں ان کے بارے میں بات نہ کی جائے، ابھی یہ گھریلو خاتون ہیں تو مخالفین کے لئے غداری کا بیانیہ داغ دیا ہے اگر سیاسی خاتون ہوتیں تو ایٹم بم چلادیتیں۔اس موقع پر سابقہ خاتون اول کی سوشل میڈیا ٹیم کے عہدیدار کے ساتھ ہونے والے مبینہ ٹیلیفون گفتگو بھی میڈیا کو سنائی گئی ۔

انہوںنے کہا کہ عمران خان ایک طرف سازش کے خط کا چرچہ کرتے ہیں ، سوال ہے جب آپ کو پتہ چل گیا تھا تو آپ نے کیوں اس ملک کے سفیر کو طلب نہیں کیا ،جوابی مراسلہ کیوں نہ لکھا،اگر کوئی سازش خفیہ نہیں ہے اسے چھپانے کی شعوری کوشش نہیں کی جاتی تو وہ کیسے سازش ہوتی ہے ۔

ڈپلومیٹ ایک دوسرے کے ساتھ بات چیت کرتے ہیں۔ یہ کیسی سازش تھی جس کا آپ کو مراسلہ لکھا گیا ، سازش میں کبھی مطلع نہیں کیا جاتا ۔ عمران خان آپ نے بیرونی سازش کا نام لے کر اندرونی سازش کی ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں آئینی حق حاصل تھاکہ تحریک عدم اعتماد لائی جائے اور جب آپ کی حکومت کے خاتمے کی کوشش ہوئی تو آپ نے عسکری ادارے سے بھیک مانگی اور یہ ریکارڈ پرہے

، آپ نے کہا کہ نیوٹرل نہ رہنا یہ گنا ہ عظیم ہے ،آپ کا اپنا کردار کیا ہے ؟۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی طرف سے تحفہ ملے جس سے آپ کے گھر کاکچن چلایا، آپ نے اٹھارہ ،اٹھارہ کروڑ کی گھڑیاں بیچیں ،یہ لوگوں کو نام دیتے ہیں لیکن ان کے لئے توشہ خان سے بہتر کوئی اور نام نہیں ہو سکتا،

جو تحفہ توشہ خانہ میںآیا گھر لے گئے ، کچھ اہلیہ کو دیدئیے اورکچھ عزیز و اقارب میں تقسیم کر دیا ۔باقی معاملات الگ ہیں،فارن فنڈنگ اور دیگر چوریاں اور ڈاکے کرپشن کے ایفل ٹاور ہیں ۔انہوں نے کہا کہ آپ کے جرائم کی فہرست بہت طویل ہے ، خطرہ بیرونی سازش سے نہیں اندرونی سازش سے ہے ۔

انہوں نے کہا کہ آپ کی دو مختلف پوزیشن ہیں اگر آپ حکومت میں ہوں تو قومی سلامتی کے ادارے کے سربراہ بہترین جمہوریت پسند ہیں بہترین جنرل ہیں حکمت عملی رکھنے والے جرنیل ہیں ، وہ آپ کی ہر مشکل میں مدد کرتے ہیں،فیٹف میں مدد دی جاتی ہے لیکن جب تحریک عدم اعتماد آئی اور حکومت ختم ہو گئی تو پھر انہی سے شکوہ پیدا ہو گیا ۔انہوں نے کہا کہ ضمنی انتخابات میں اداروں کی

مداخلت کی بات کی گئی ،آپ کے پاس ایک ثبوت ہے کہ ہمیں کسی ایک ادارے کی حمایت حاصل ہے تو سامنے لائیں ، ہم آپ کو اس ثبوت پر جواب دیں گے۔ آپ کیس کا فیصلہ آنے پر مٹھائی بھی بانٹ لیتے ہیں اور پھر اس کے خلاف سپریم کورٹ میں بھی چلے گئے ، پاکستان کو خطرہ بیرونی سازش سے نہیں اندرونی سازش سے ہے ۔بتایا جائے گھرانہ ڈاٹ کام کس کا پلیٹ فارم ہے اسے کس فنڈز میں پیسے دئیے گئے ہیں ،

جنرل ہارون کا اس سے کیا تعلق ہے ، ایکس سروس مین کے لوگ آپ کی پی ٹی آئی کی سوشل میڈیا کی تنخواہ پر ہیں ، بتایا جائے ارسلان خالد ڈیجیٹل میڈیا کے لئے کیسے کروڑں ، اربوں خرچ کرتا رہا ،گھرانہ ویب سائٹس کو آپ نے کروڑ روپے کیسے دئیے اس کا جواب بھی آپ کو دینا پڑے گا ،ریاست پاکستان کا پیسہ ہے آپ کے باپ کا پیسہ نہیں تھا، آپ نے سیاسی مخالفین کے لئے اربوں روپے ڈیجیٹل پلیٹ فارم پر لگا دیا

اور پھر اسے باہر کے ممالک کے ساتھ منسلک کر دیا ،آپ نے سب سے پہلے اداروں کے خلاف سازش کی ، آپ جو کر رہے ہیں پاکستان کا برا کر رہے ہیں،پاکستان کی سیاست کا برا کر رہے ہیں، آئینی حدود میں رہ کر سیاست کرتے کوئی اعتراض نہیں تھا لیکن آپ نے سیاست کو گندا کیا ،

جھوٹے اور بے بنیاد الزامات لگائے ، سفارت کو گندا کیا ، وہ ممالک جن سے باہمی تعلقات دہائیوں پر محیط ہیں آپ نے الزام لگایا کہ یہ رجیم چینچ کی سازشیں کرتے رہے ہیں ،آپ کا صدر اس سفیر کو کیوں تعریفی اسناد دے رہا ہے ،اگر وہ سفارتکار سازش کا مرتکب تھا تو کس طرح اسناد تقسیم کی گئیں ۔سابقہ خاتون اول نے کہا کہ سیاسی مخالفین کو گندا کرو ، انہیںغداری کے ساتھ ٹیگ کرنا ہے،

کیا آپ نے عوام کوبالکل بدھو سمجھ لیا ہے ۔انہوںنے کہا کہ کون نہیں جانتا کہ آپ کے دور میں فرح گوگی کے ذریعے تھانے بکے ،یہاں پر ٹی کے پرائیویٹ سیکرٹری کروڑوں لیتے رہا ،اربوں روپے سی این ڈبلیو ڈیپارٹمنٹ سے نکل کر بزدار کی جیب میں گئے جو بذریعہ فرح گوگی بشریٰ بیگم تک پہنچے ، کیا یہ کرپشن عمران خان کی مرضی کے بغیر ہو سکتی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ ہم توشہ خان کو واضح کہنا چاہتے ہیں کہ

ریاستی ادارہ کسی ہماری مدد نہیںکر رہا ہے ہم اس کی تردید کرتے ہیں ہمیں عوام کے اجتماعی شعور پر اعتماد ہے ، ضمنی انتخابات میں ہم کم و بیش18سے19نشستیں جیتیں گے ۔ صوبائی وزیر داخلہ عطا اللہ تارڑ نے کہا کہ یکم جولائی کو اینٹی کرپشن نے ایک پرچہ درج کیا جس کے تحت دو گرفتاریاں کی گئی ہیں ، رانا یوسف جوچیف ایگزیکٹو آفیسر فیصل آباد انڈسٹریل اسٹیٹ اور دوسرا مقصود احمد ہے

جو سپیشل اکنامک زون کا سیکرٹری تھا ، فرح گوگی نے ان کے ذریعے انتہائی ساد ہ واردات کی ہے ، فیصل آباد سپیشل اکنامک زون جو غیر ملکی سرمایہ کاری کے لئے بنایا گیا تھا اس میں فرح گوگی نے دس ایکڑ کا انڈسٹریل پلاٹ جس کی قیمت 60کروڑ روپے بنتی ہے صرف آٹھ کروڑ تیس لاکھ روپے میں الاٹ کرایا ، اس کے لئے فرح گوگی کی والدہ اور احسن جمیل گجر کے نام پر فرضی کمپنی بنائی گئی ،

اسے حاصل کرنے کے لئے کیپٹل دو ارب روپے ہوناچاہیے ،احسن جمیل گجر نے جعلی بینک گارنٹی دے کر الاٹمنٹ کرائی ۔ مقدمے میں فرح گوگی، ان کی والدہ بشریٰ خان اور احسن جمیل گجر نامزد ہیں جبکہ دو لوگ گرفتار کئے گئے ہیں۔ اس کا ٹرائل چل رہا ہے جس میں واضح ہے کہ یہ غیر قانونی طور پر الاٹمنٹ ہوئی تھی ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان عام آدمی نہیں بلکہ تاریخ کا سب سے بڑا چور ہے ،

اس کی اہلیہ بشریٰ مانیکا بنی گالہ میں بیٹھ کر ڈیلیں کرتی تھیں۔انہوں نے کرپشن کے نئے طریقے متعارف کرائے ، ان کی کرپشن پر سیریز بنے گی ۔عمران خان نے دو خواتین کے ساتھ مل کر اربوں روپے منی لانڈرنگ کی ،ہیروں کا کاروبار چلایا ہے ۔ابھی تک بہت کچھ سامنے سامنا ہے بلکہ تھوک کے حساب سے سامنا آنا ہے ۔ ہیروں کی پوٹلیاںپرائیویٹ جہازوں سے باہر جاتی تھیں اور بیچے جاتے تھے

،ہیرے دو اور جو مرضی غیر قانونی کام کرالو ۔ انہوں نے کہا کہ توشہ خانہ وزیر اعظم کی براہ راست دسترس میں تھا ،ایک دوست ملک کے سربراہ نے اس بات کا برا منایا کہ انہوںنے انہیں جو گھڑی تھی وہ دنیا میں صرف ایک ہی گھڑی تھی جسے یہ بلیک مارکیٹ میں بیچنے پہنچ گئے اور اس دوست ملک کے سربراہ نے وہ گھڑی واپس خریدی ۔ کیا قومی سلامتی کے ادارے کے سربراہ نے آپ کو کہا تھاکہ آپ کرپشن کریں ۔

جب آپ کی کرپشن سامنے آتی ہے آپ اداروں پر حملہ آور ہو جاتے ہیں، یہ انتہائی قبیح اور مکرو ہ حرکت ہے اس کا کوئی جواز نہیں ۔انہوں نے میں ارشد شریف اور عمران ریاض کو مناظرے کا چیلنج دیتا ہوں کہ وہ صرف ایک 60کروڑ روپے کے پلاٹ کے معاملے پر بات کر لیں اور اسے صحیح ثابت کر دیں۔عمران خان ساری کرپشن کے بے نامی دار ہیں ،فرح گوگی ، احسن جمیل اوربشری مانیکا ٹرائیکا کے

سربراہ عمران خان ہیں اورکرپشن کا پیسہ ان تک جاتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جو آپ کے خلاف بولے وہ غدارغدار ہے ، ٹی کے دو فرنٹ مین مظفر گڑھ سے پکڑے ہیں ، آپ کا جوبھی چوری اور ڈاکہ پکڑا جاتا ہے وہ وہ پچاس کروڑ سے کم نہیں ہے اور یہ اربوں تک گئے ہیں ، جس دن آپ کی کرپشن کا کیس نکلتا آپ ادارے کے خلاف ہو جاتے ہیں یہ بند کر دیں ، کیا ہم نہیں جانتے آپ کس قماش کے آدمی ہیں،

بنی گالہ کا خرچہ وزیر اعظم ہائوس سے جاتا رہاہے ۔آپ فرح گوگی کو کیو ں واپس نہیں لائے،ہم اس کے ریڈ وارنٹ جاری کرنے جارہے ہیں۔ ہم مطالبہ ہے کہ اسے واپس لایا جائے اور اس کے لئے بطور حکومت بھرپور کوشش کریں گے ،اگر عمران خان سچا ہے تو رب ذوالجلال کی قسم کھا کر کہے کہ فرح گوگی ، احسن جمیل اور اہلیہ جو کام کر رہی تھیں اسے اس کا علم نہیں ہے ،

فرح گوگی کو اگلی فلائٹ سے واپس لے کر آئے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان گیارہ سے پانچ وزیر اعظم ہائوس ہوتے تھے اور اس کے بعد بنی گالہ واپس آ کر محفلیں سجتی تھیں جس میں فرح گوگی ، احسن جمیل گجر ،بشریٰ مانیکا اور عمران خان لوٹ مار کی تقسیم کرتے تھے اور خوشیاں مناتے تھے۔جس دن فرح گوگی اور احسن جمیل گجر واپس آئے ایک گھنٹے میں وعدہ معاف گواہ بنیں گے

کہ یہ سب کچھ عمران خان اور بشریٰ مانیکا کے کہنے پر لوٹا گیا ۔ آپ دین کو استعمال کر رہی ہے ،قیامت کے دن آپ سے اس کا جواب لیں گے،آپ غدار اور کافر ہونے کے سرٹیفکیٹ بانٹ رہی حالانکہ یہ خود کرپشن میں ڈوبی ہوئی خاتون ہے ، آنے والے دنوں میں گھیرا تنگ ہے

،پنجاب میں جتنے گھپلے کئے ہیں ایک ایک قصہ سامنے آئے گا،آپ اپنا زور لگا لیں ہم اپنا زور لگائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جس نے بھی عمران خان پر احسان کیا ہے اس نے اس کی پیٹھ میں چھرا گھونپا ہے لیکن اب عمران خان کا انجام اچھا نظر نہیں آتا۔ ان کے پاس ضمنی انتخابات میں کھڑے کرنے کے لئے

امیدوار نہیں ہے ،کون آپ کو امیدوار لا کر دے ،انتخاب میں آپ کو لگ پتہ جائے گا کس بھائو بکتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ فرح گوگی اوربشری بی بی کے خلاف بہت کیسز ہیں ،جس دن فرح گوگی آ گئی بشری بی بی بھی گرفتار ہوجائے گی،اگر خان صاحب کو گرفتار کرنا ہوتو منشیات کے استعمال پر گرفتار کرسکتے ہیں،

کس کو نہیں معلوم کہ کوکین بنی گالہ میں کیسے پہنچتی ہے ،حکومت کا عمران خان کو گرفتار کرنے کا پلان نہیں ہے،عمران خان تسبیح پکڑ کر کرپشن کرتے ہو ،بشری بی بی ، ان کا بیٹا ابراہیم مانیکا اورسابق شوہر اربوں پتی ہو چکے ہیں، عمران خان جو کچھ کررہے ہیں انہیں بھگتنا پڑے گا،

شکست نظر آنے پر حکومت اور ریاست مخالف تقریریں کررہے ہیں ،فرح گوگی نے چھ ارب روپے کا نوٹس بھجوایا ہے ،اسلحہ سے پاک ضمنی انتخاب کروائیں گے ،ایک بندوق ایک کلوشنکوف نظر نہیں آنے دوں گا ،مہنگائی سے ریلیف کیلئے جلد وزیر اعلی اعلانات کریں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button