تازہ ترینانٹرنیشنل خبریں

غیر ملکی کارکنوں کیلئے بڑا ریلیف، سعودی عرب نے تحفظ کیلئے بڑا قدم اٹھالیا

سعودی عرب کی قومی کمیٹی برائے انسداد انسانی سمگلنگ نے ہیومن ٹریفکنگ کی تعریف وضع کردی۔

کمیٹی کے مطابق غیر ملکی کارکن کو اقامہ نہ دینا، پاسپورٹ حوالے نہ کرنا یا کوئی بھی شناختی دستاویز قبضے میں رکھنا یا کارکن کو اس سے محروم کرنا انسانی سمگلنگ کے زمرے میں آتا ہے۔ اس کے علاوہ غیر قانونی طریقے سے کام لینا، ایسی ڈیوٹی لینا جو اس کی ملازمت کے معاہدے کے منافی ہو اور اس سے مطابقت نہ رکھتی ہو انسانی سمگلنگ میں شمار ہوتی ہے۔

انسداد انسانی سمگلنگ کمیٹی کا کہنا ہے کہ کارکن کو دفتر یا کارخانے یا کام کی جگہ سے نکلنے سے روکنا، اسے مقررہ وقت پر حقوق نہ دینا اور مقررہ حد سے کم اجرت دینا یا چھٹی کے دنوں میں چھٹی کرنے سے روکنا انسانی سمگلنگ ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button