انٹرنیشنل خبریںتازہ ترین

صارفین اپنے خراب ہونے والے موبائل فونز کی مفت مرمت کے لیے کیا کیا جھوٹ بولتے ہیں؟ ایپل سٹور کی ملازم نے دلچسپ باتیں بتادیں

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) آئی فون صارفین خراب ہونے والے آئی فون کی مفت مرمت کرانے کے لیے ایپل سٹور پر جا کر کیا کیا جھوٹ بولتے ہیں؟ ایپل سٹور کی ایک ملازم نے اس حوالے سے دلچسپ باتیں بتا دی ہیں۔ دی سن کے مطابق ایما نامی اس ملازم نے اپنے ٹک ٹاک اکاﺅنٹ @emmatainmentپر پوسٹ کی گئی ایک ویڈیو میں بتایا ہے کہ لوگ اپنا خراب آئی فون ٹھیک کرانے کے لیے ایپل سٹور پر آ کر کئی طرح کے جھوٹ بولتے ہیں مگر وہ نہیں جانتے کہ ایپل سٹورز کا عملہ فوراً ان کا جھوٹ پکڑ لیتا ہے۔
ایما بتاتی ہے کہ لوگوں سے فون پانی میں گر کر خراب ہو جاتا ہے اور وہ اسے مفت ٹھیک کرانے کے لیے آ کر جھوٹ بولتے ہیں کہ ان کاچلتے چلتے بند ہو گیا ہے۔ جب ان سے کہا جائے کہ ان کا فون پانی میں گرا ہے تو وہ مانتے ہی نہیں اور کہتے کہ پانی تو ان کے فون کے قریب سے بھی نہیں گزرا حالانکہ جب فون کھولا جاتا ہے تو اندر ابھی تک پانی کے قطرے موجود ہوتے ہیں۔ ایسے میں کوئی ان لوگوں سے پوچھے کہ اگر ان کا فون پانی میں نہیں گرا تو کیا اسے پسینہ آرہا ہے؟
ایما نے بتایا کہ اکثر صارفین سٹور پر آ کر یہ جھوٹ بولتے ہیں کہ وہ پہلے بھی ایپل سٹور سے اپنے فون کو ٹھیک کروا چکے ہیں اور اس وقت انہوں نے ایپل کیئر خریدی تھی۔ ان لوگوں کو معلوم نہیں ہوتا کہ ایپل کیئر پلان فون کے سیرئیل نمبر سے منسلک ہوتا ہے اور عملے کو معلوم ہوتا ہے کہ کس صارف نے ایپل کیئر پہلے خریدی ہے اور کس نے نہیں۔

ایما کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ آ کر یہ جھوٹ بولتے ہیں کہ ان کے منیجر نے وعدہ کیا تھا کہ جب ان کا آئی فون خراب ہو گا تو وہ انہیں ایک بار مفت ٹھیک کرکے دیں گے۔ لوگوں کا یہ حربہ بھی کبھی کام نہیں آتا۔
ایما نے کہا ہے کہ ”میں لوگوں کو اتنا کہنا چاہتی ہوں کہ ایپل سٹور پر آ کر کسی بھی طرح کا جھوٹ بولنا انہیں کوئی فائدہ نہیں دے سکتا، اگر وہ مفت ریپیئرنگ کے اہل ہیں، تبھی انہیں یہ سروس دی جائے گی، بصورت دیگر وہ کوئی بھی جھوٹ بول لیں، ان کا فون مفت ٹھیک نہیں کیا جاتا۔“

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button