تازہ تریننیشنل خبریں

سانحہ مری، اپوزیشن نے حکومت سے بڑا مطالبہ کردیا

اپوزیشن رہنماؤں نے سانحہ مری کی تحقیقات کے لیے حکومت سے جوڈیشل کمیشن بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں اپوزیشن نے سانحہ مری پر حکومتی کمیٹی کو مسترد کرتے ہوئے جوڈیشل کمیشن بنانے اور عمران خان سے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا۔ اجلاس کے دوران سانحہ مری میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لیے فاتحہ خوانی کی گئی۔سپیکر نے سانحہ مری پر بحث کا اعلان کیا تو قائد حزب اختلاف شہباز شریف کا کہنا تھا کہ 23 افراد کی موت کی سوفیصد حکومت ذمہ دارہے، قوم انہیں معاف نہیں کرے گی۔
شہباز شریف کا کہنا تھا کہ مری میں، دل خراش اور اندوہ ناک سانحہ ہوا، بیس گھنٹے ہزاروں لوگ گاڑیوں میں پھنسے رہے لیکن کوئی پوچھنے والا نہیں تھا، معصوم بچے، نوجوان اور بزرگ خواتین دم توڑ گئیں، کیا یہ کوئی حادثہ تھا یا کسی کی مجرمانہ غفلت تھی، وہاں پر کوئی انتظام نہیں تھا اور ادارے موجود نہیں تھے۔ لوگ مدد کے لیے آسمان کی طرف دیکھتے رہے، بتایا جائے سیف سٹی اسلام آباد کے کیمرے بھی لگے ہوئے ہیں انہیں چیک کیوں نہیں کیا گیا؟ محکمہ موسمیات نے الرٹ جاری کیا لیکن کوئی انتظام کیوں نہیں کیا گیا؟

سانحہ مری پر گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ ایک وزیرنے سوشل میڈیا پر کہا لاکھوں لوگ مری پہنچے ہیں، ایک وزیر سوشل میڈیا پر جشن منا رہا تھا، اسی وزیرنے پھر کہنا شروع کردیا کہ سیاحوں کو نہیں آنا چاہیے تھا۔ ایسی منافقت پاکستان کی تاریخ میں نہیں دیکھی، سانحہ مری کو بھولنے نہیں دیں گے، حکومت، وزرا کی طرف سے سیاست کرنے پر مذمت کرتے ہیں۔ وزرا کے ایسے بیانات کوئی نئی بات نہیں، جب بھی کوئی حادثہ ہوتا ہے تویہ متاثرین کو ہی مورد الزام ٹھہرا دیتے ہیں، جیسا کہ وزیراعظم نے ہزارہ واقعے پر کہا تھا کہ لاشوں سے بلیک میل نہیں ہوں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button