تازہ تریننیشنل خبریں

میڈیکل کالج طالبہ کی خودکشی کا کیس، اہم انکشافات سامنے آگئے

میڈیکل کالج میں چند روز قبل خود کو گولی مار کر خودکشی کرنے والے میڈیکل کالج کی طالبہ عصمت کے کیس میں مزید پیش رفت سامنے آئی ہے۔

پولیس نے لڑکی کا مبینہ نکاح پڑھوانے والے امام مسجد کو حراست میں لے لیا ہے۔دوسری جانب پولیس نے متوفیہ کے لیپ ٹاپ اور موبائل فون کا فرانزک کرانے کیلئے لیبارٹری بھیج دیا ہے۔پولیس کے مطابق نکاح خواہ مولوی محمد ادریس کا کہنا ہے کہ شمن سولنگی نے نکاح کے کاغذات پر دستخط کرائے اور چلا گیا، نکاح کے وقت لڑکی نہیں تھی۔کیس کا مرکزی ملزم شمن سولنگی تاحال مفرور ہے، جس کی تلاش کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔
واقعے سے متعلق لڑکی کے اہل خانہ کا کہنا تھا کہ عصمت اور شمن سولنگی کی بیٹی بچپن میں ساتھ پڑھتے تھے، شمن سولنگی نے عصمت کا نمبر اپنی بیٹی سے حاصل کیا تھا۔شمن سولنگی کی دو بیویاں اور آٹھ بچے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button