اسلامک کارنر

رمضان میں مرنے کی فضیلت

حدیث شریف میں آتا ہے کہ جو مومن رمضان میں یا جمعہ کے دن وفات پائے، اس سے عذاب قبر اٹھالیا جاتا ہے۔حضرت عبداللہ بن عمرو بن عاص رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا کہ:جومسلمان جمعہ کے دن یا جمعہ کی شب مرتا ہے اللہ تعالیٰ قبر کی آزمائش سے اس کی حفاظت فرماتے ہیں۔حضرت انس رضی اللہ کی روایت میں ہے کہ آپ ﷺ نے فرمایا:جمعہ کے دن جس کی موت ہوگی وہ عذاب قبر سے محفوظ رہے گا۔مسند احمد حديث نمبر ( 6546 )جامع ترمذى حديث نمبر ( 1074 )محدثین کے درمیان یہ اختلاف ہے کہ ہمیشہ کے لیے قبر کا عذاب اس سے اٹھالیا جاتا ہے یا صرف رمضان تک یا صرف جمعہ کو؟ کچھ حضرات اسی دوسرے قول کو لیتے ہیں

کہ صرف رمضان یا صرف جمعہ کو قبر کا عذاب اٹھایا جاتا ہے اور کچھ محدثین پہلے قول کو لیتے ہیں کہ ہمیشہ کے لیے عذاب قبر اٹھالیا جاتا ہے۔ اللہ کی بے پناہ رحمتوں سے یہی امید رکھنی چاہیے کہ ہمیشہ کے لیے اس سے عذاب قبر اٹھالیا جاتا ہے۔ اس حدیث کی وجہ سے رمضان یا جمعہ کے دن وفات پانے والے کو مبارک کہا جاسکتا ہے۔اور اگر کوئی غیر مسلم رمضان المبارک میں مر جائے تو صرف ماہ مبارک کے احترام میں رمضان المبارک تک عذاب قبر سے محفوظ رہے گا، اور رمضان کے بعد پھر اسے عذاب ہوگا

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button