پاکستان

الیکشن نہ کرانے پر عمران خان نے اپوزیشن کو کیا دھمکی دی تھی؟ برطانوی اخبار کا تہلکہ خیز دعویٰ

برطانوی اخبار دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان نے اپوزیشن کو عدم اعتماد تحریک واپس لے کر الیکشن میں نہ جانے پر مارشل لا کی دھمکی دی تھی ۔برطانوی اخبار گارڈین نے اپنے پاس موجود دستاویزات کے حوالے سے بتایا کہ عمران خان جنہیں ہفتے کے روز پاکستان کے وزیراعظم کے عہدے سے معزول کر دیا گیا نے اپوزیشن کو اقتدار سونپنے کے بجائے مارشل لاء نافذ

کرنے کی دھمکی دی تھی۔برطانوی اخبار کے مطابق تحریک عدم اعتماد پر عمران خان نے ابتدائی طور پر ووٹنگ کو روکنے کی کوشش کی تھی۔ ڈپٹی سپیکر کی رولنگ کے خلاف اپوزیشن سپریم کورٹ گئی جس پر سپریم کورٹ نے خان کے اقدامات کو آئین کی خلاف ورزی قرار دیا اور ہفتے کو ووٹنگ کرانے کا حکم دیا اور گزشتہ رات ان کو تحریک عدم اعتماد کے ذریعے عہدے سے ہٹا دیا گیا۔برطانوی اخبار نے مزید بتایا کہ جمعہ کے روز عمران خان کی حکومت کے ایک سینئر وزیر نے اپوزیشن لیڈر کو ایک پیغام بھیجا جس میں لکھا تھا: “مارشل لا یا انتخابات – آپ کی مرضی۔”اخبار کے مطابق حزب اختلاف کی شخصیت نے بتایاکہ اس نے عمران خان کے مطالبے کو مسترد کر دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ’عمران خان کو یقین تھا کہ یا انہیں ہونا چاہیے یا کسی کو نہیں ہونا چاہیے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button