پاکستان

اسد قیصر کو بتایا گیا کہ آپ پر آرٹیکل 6لگایا جائیگا تو انہوں نے عمران خان کو کیا کہا اور اسمبلی کی طرف دوڑ لگا دی؟ اصل بات تو اب سامنے آئی

عمران خان کو پارلیمنٹ سے عدم اعتماد کے ذریعے عہدے سے فارغ کیا گیا اور عدالتی احکامات پر اُس وقت کے سپیکر اسد قیصر نے ووٹنگ کے دن کئی بار عدالتی احکاما ت پر عمل درآمد کرانے کی ایوان کو یقین دہانی کرائی لیکن آخر میں عہدے سے سبکدوش ہو کر ایوان پینل آف چیئر ایاز صادق کے سپرد کرگئے ، اسد قیصر کو جب آرٹیکل 6 کے بارے بتایا گیا تو انہوں نے

دراصل عمران خان سے کیا کہا تھا، اس بارے میں سینئر صحافی نے بڑا دعویٰ کردیا۔خوشنود علی خان نے اپنے کالم میں لکھا کہ ” سب کچھ ہائی الرٹ پر تھا، قومی اسمبلی کا اجلاس ملتوی ہوئے جارہا تھا، آخری بار جب اسد قیصر کو عمران خان نے وزیراعظم ہاؤس طلب کیاتو اس وقت 12 بجنے میں چند منٹ باقی تھے، اسد قیصر کو وہاں بتادیا گیا کہ قیدیوں کو لے جانے والی گاڑیاں قومی اسمبلی بلڈنگ کے آس پاس پہنچ گئی ہیں، آپ نے رویہ نہ بدلا تو آپ پر آرٹیکل 6 لگائے جانے میں چند منٹ باقی ہیں جس کے اثرات اور نتائج آپ کو معلوم ہیں،سپریم کورٹ کھل چکی ہے، الیکشن کمیشن بھی کھل گیا ہے اور صرف آپ نہیں عمران خان اور قاسم سوری بھی آرٹیکل 6 میں آئیں گے۔اسد قیصر نے اچانک عمران خان سے کہا ”سر میں مستعفی ہورہا ہوں“ اور اسمبلی کی طرف دوڑے اور مستعفی ہوکر انہوں نے معاملات ایاز صادق کے سپرد کردئیے،یہ وہ لمحہ تھا! جب عمران خان ٹوٹ گئے اور حکم دیا کہ ہیلی کاپٹر مجھے بنی گالہ چھوڑ آئے ، پھر اسد قیصر نے اپنی حکومت کے ڈراپ سین کے آخری لمحات دیکھے”۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button