اسلامک کارنر

وہ وقت جب حضوراکرمﷺ اپنے پیٹ مبارک کو چارپائی کی لکڑی کے ساتھ لگا کر زمین کی طرف نیچے جھک گئے تو حضرت عائشہ صدیقہ ۔۔۔۔ پڑھیے طب نبوی ﷺ سے ایک درد ناک رات کا احوال

میرے نبی چارپائی پہ لیٹے ہوئے تھے، کھبی ایک طرف پہلو بدلتے ہیں کھبی دوسری طرف پہلو بدلتے ہیں۔ کھبی اٹھتے ہیں تو کھبی بیٹھتے ہیں۔ کچھ وقت گزر گیا تو چارپائی میں تھوڑا سا آگے بڑھے اور چارپائی کی جو لکڑی ہوتی ہے جس پہ بان بنا ہوتا ھے اس کڑی پہ اپنے پیٹ کو لگایا اور زمین کی طرف نیچے جھک گئےحضرت عائشہ صدیقہ ام المومنین بیٹھ گئ اور فرمایایا رسول اللہ خیر تو ہے آپکو کیا ہوا؟ سیدنا محمد نے فرمایا ” حمیرا بھوک بڑی لگی ہے بھوک بہت زیادہ لگی ہوئی ہے جس نے بے چین کیا ہوا ہے”حضرت عائشہ رونے لگی اور فرمایا۔

” یارسول اللہ آپ تو دو جہانوں کے سردار ہیں آپ کو کس چیز کی کمی ہے ؟ آپ تو جو چاہیں کر سکتیں ہیں توپھر آپ اللہ تعالی سے مانگتے کیوں نہیں آپ کے لیے کیا مشکل ہے آپ ہاتھ تو اٹھائیں” فرمایا ” عائشہ اسی بھوک میں اللہ سے ملوں گا تو اللہ پاک میرے بارے میں کیا سوچیں گے مجھ سے پہلے میرے بھائی انبیاء اسی بھوک میں چلے گئے تو کیا میں نہیں جا سکتا میں بھی اسی بھوک میں چلا جاؤں گا” محبوب کل کائنات جس کے گھر میں دو مہینے چولھا نہیں جلتا تھا اور اس نبی کی امت اسی روٹی کے پیچھے :کھبی سود۔

…. کھبی چوری….کھبی ______ڈاکے…. کھبی وارداتیں …کھبی قتل….کھبی زنا… کھبی رشوت…..کھبی حرام….. کھبی کرپشن… کھبی زنا کے اڈے…. کھبی شراب کے اڈے…. کھبی سود کے اڈے… کھبی جوے کے اڈے… کھبی رشوت کے بازار….. کھبی سٹے کے بازار….. کھبی زخیرہ اندوزی کے بازار….. کھبی ملاوٹ کے بازار … سجاے بیٹھے ہیں…ہائے یا رسول اللہ سیدنا محمّد….. آپ نے کیا کیا ــــــــــــ! اور ہم نے کیا کیا ــ

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button