پاکستان

خبردار!!!! اگر آپ کا بینک میں اکاؤنٹ ہے تو بھاری نقصان سے بچنے کے لیے اپنی یہ غلطی سدھار لیں

کاروباری حضرات ہوں یا تنخواہ دار مڈل کلاس طبقہ، بینک آج سب کی زندگی کا ایک اہم حصہ بن چکے ہیں۔ انٹرنیٹ اور موبائل بینکنگ نے بینک کی خدمات اور سہولیات حاصل کرنا بہت آسان بنا دیا ہے۔ بینکوں کی زیادہ تر خدمات اب آن لائن دستیاب ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ انٹرنیٹ اور موبائل بینکنگ کا رجحان بڑھ رہا ہے۔ لیکن کیا کبھی سوچا ہے کہ آپ اپنے بینک

اکاؤنٹ، خصوصاً سیونگ اکاؤنٹ کا صحیح استعمال کر رہے ہیں یا نہیں؟ اکثر لوگ سیونگ اکاؤنٹ استعمال کرتے ہوئے کچھ ایسی غلطیاں کرتے ہیں جو دیکھنے میں چھوٹی لگتی ہیں لیکن ان کا مالی اثر بہت زیادہ ہوتا ہے۔ آئیے ان غلطیوں کے بارے میں جانتے ہیں اور جو بینک اکاؤنٹ استعمال کرتے وقت نقصان کا باعث

بنتی ہیں۔ تمام ضروریات کے لیے ایک ہی اکاؤنٹ: زیادہ تر لوگ اپنی تمام ضروریات کے لیے ایک ہی سیونگ اکاؤنٹ کا استعمال کرتے ہیں۔ ای ایم آئی کی ادائیگی ہو یا انشورنس پریمیم جمع کرانا ہو، بجلی کے بلوں کی ادائیگی اور آن لائن شاپنگ تک کے لیے صرف ایک ہی سیونگ اکاؤنٹ کا استعمال کیا جاتا ہے۔ لیکن تمام کام ایک ہی اکاؤنٹ سے کرنے سے خرچوں پر نظر رکھنا مشکل ہو جاتا ہے۔ یہ نہیں معلوم وہ پاتا کہ کہاں کتنا خرچ ہو رہا ہے۔ لہٰذا، ایک سیونگ اکاؤنٹ کے بجائے، آپ کی تمام ضروریات کے لیے کم از کم دو اکاؤنٹس ہونے چاہئیں۔ تمام رقم ایک اکاؤنٹ میں جمع رکھنا: عموماً دیکھا گیا ہے کہ لوگ اپنی زندگی بھر کی جمع پونجی ایک ہی بچت کھاتے میں رکھتے ہیں۔ آج کے دور میں سائبر کرائم عروج پر ہے اور لوگ دن بہ دن بینکنگ فراڈ کا شکار ہو رہے ہیں۔ اس لیے ساری رقم ایک اکاؤنٹ میں رکھنا عقلمندی نہیں ہے۔ اس لیے اگر آپ ایک سیونگ اکاؤنٹ کے بجائے دو یا زیادہ سیونگ اکاؤنٹس رکھتے ہیں، تو آپ کی رقم زیادہ محفوظ ہوگی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button