پاکستان

اصل رولا کیا تھا ؟سابق وزیر اعظم آفس سے آرمی چیف کو کیا کہا گیا ؟سچ سامنے آگیا

ڈی جی آئی ایس پی آر نے حقائق سے پردہ اُٹھاتے ہوئے کہا کہ سابق وزیراعظم عمران خان نے خود آرمی چیف سےرابطہ کیا تھا ، آرمی چیف، ڈی جی آئی ایس آئی وزیراعظم ہاؤس گئے تھے۔ترجمان پاک فوج تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ سابق وزیراعظم آفس سے آرمی چیف کو کہا گیاکہ ڈیڈلاک ہےبیچ بچاؤ کرائیں،انہوں نے کہا اسٹیبلشمنٹ نے

گزشتہ حکومت کو کوئی 3 آپشن نہیں دیئے ، وزیراعظم نے خود کہا تھا تحریک عدم اعتماد واپس ہونے والا آپشن قابل قبول ہے لیکن اپوزیشن نے کہا کہ یہ ہمیں منظور نہیں۔ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے کہا ہے کہ افواہوں کی بنیاد پر بے بنیاد کردار کشی کرنا کسی صورت قابل قبول نہیں ہے، عوام اور سیاسی جماعتوں سے

درخواست ہے کہ فوج کو سیاست میں مت گھسیٹیں۔ نیشنل سیکیورٹی کمیٹی کے اعلامیہ میں سازش کا لفظ نہیں ہے۔ آرمی چیف نے مدت ملازمت میں توسیع مانگی نہ وہ لیں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button