تازہ ترینپاکستاننیشنل خبریں

وزیر تعلیم سندھ کا عمر کوٹ کے سکول اور کالجز کا اچانک دورہ

عمرکوٹ (سید ریحان شبیر)وزیر تعلیم سندھ نے عمر کوٹ کے سکول اور کالجز کا اچانک دورہ کیا اور انتظامات کا جائزہ لیا ۔ وزیر تعلیم سندھ سید سردار علی شاہ نے کہا کہ سندھ میں 1400 گھوسٹ سکولوں کے معاملے کی تحقیقات ہو رہی ہیں ، یہ سکول صرف کاغذات میں تھے جبکہ ان کا زمین پر کوئی وجود نہ تھا ۔

سکول اور کالجز کے اچانک دورہ کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے سید سردار علی شاہ نے کہا کہ سندھ میں نظام تعلیم کافی بہتر ہے ، نظام تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے کےلیے گیارہویں اور بارہویں جماعت کے نصاب کو ریویو کیاجارہا ہے ، سندھ میں "1400”سکول صرف کاغذوں میں موجود تھے لیکن ان اسکولوں کا زمین میں کو وجود نہیں تھا اس سارے معاملات کی تحقیقات ہورہی ہے۔
صوبائی وزیر تعلیم کا کہنا تھ اکہ ان کا تعلق عمرکوٹ سے ہے اور انہوں نے اپنی تعلیم بوائے ڈگری کالج عمرکوٹ سے حاصل کی ، اسی وجہ سے وہ آج سکول، کالجز کی اچانک وزٹ کی شروعات یہاں سے کررہے ہیں ۔ سکولوں کالجز اور دیگر تعلیمی اداروں میں تعلیم کامعیار بلڈنگ سے نہیں اساتذہ کی محنت قابلیت سے ہوتاہے کہ استاد طالب علم پر کتنی محنت کرتا اور توجہ دیتا ہے ۔

وزیر تعلیم سید سردار شاہ کاکہنا تھاکہ آنے والے سال سے گیارہویں اور بارہویں جماعت کے نصاب کو ریویو کیاجارہا ہے، اس بات کا بھی جائزہ لیں گے کہ سکالرشپ پر دس فیصد بچوں کو فری تعلیم دی جاری ہے یا نہیں ، پرائیویٹ سکولوں کےلیے بھی سوچا جارہا ہے ، تعلیم کے معیار پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا ، ایک سوال کےجواب میں ٹیکسٹ بورڈ سےمتعلق ان کاکہناتھاکہ ٹیکسٹ بورڈز کےمتعلق کافی شکایات ہے وہ جلد بورڈ کے منسٹر اور افسران کےساتھ میٹنگ کرینگے، ہماری کوشش ہوگی کہ روایتی طریقے کو تبدیل کرکے سندھ میں امتحانات آپٹیکل مارکس کےتحت کرائے جائیں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button