نیشنل خبریں

بیلجیئم میں گستاخانہ بیان پر پاکستانی کمیونٹی کا بھارتی سفارتخانے کے باہر مظاہرہ

برسلز(این این آئی)ہندوستان کی حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)کے رہنماں کی جانب سے نبی کریمۖ کی شان میں گستاخی کے خلاف غم و غصے کے اظہار کے لیے بیلجیئم کی پاکستانی کمیونٹی نے بھارتی سفارتخانے کے سامنے ایک بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا۔

اس مظاہرے میں پاکستانی خواتین اور بچوں کے علاوہ بنگلہ دیشی کمیونٹی کے افراد نے بھی شرکت کی۔پاکستانی کمیونٹی میں موجود تمام جماعتوں کی قیادت اور پاکستانی مساجد کے تمام علما بھی اس موقع پر موجود تھے۔مظاہرین نے اپنے ہاتھوں میں حضور اکرمۖ سے محبت کے اظہار کے لیے آپۖ کے نام کے کتبے اٹھا رکھے تھے۔بھارت سے نفرت کے اظہار کے لیے بھارتی وزیراعظم اور بی جے پی کی ترجمان کی تصاویر پر جوتے کا نشان واضح طور پر دیکھا جا سکتا تھا۔میڈیارپورٹس کے مطابق اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مقررین میں شامل علامہ عبدالطیف قادری، علامہ انصر نورانی، امام حافظ عامر، علامہ حسنات احمد بخاری، مولانا حاجی عبدالحمید و دیگر علما نے قرآن و حدیث کی روشنی میں ایک مسلمان کی حضورۖ سے محبت کو بیان کیا۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ اس طرح کی الزام تراشی اور مسلمانوں کی دل آزاری پر ساری دنیا کے مسلمانوں سے معافی مانگی جائے۔مظاہرے میں مسلم لیگ ن کے صدر حاجی پرویز، شیخ ماجد اور اس پروگرام کے آرگنائزرز شکیل گوہر، غلام ربانی بابو زاہد بھدر اور مہر عبدالمالک نے بی جے پی رہنمائو ں کی اس گستاخی کو مسلمانوں کے لیے انتہائی تکلیف دہ قرار دیا۔انہوں نے بھارت میں اس بیان کے بعد ہونے والے مظاہروں پر پولیس کے مظالم کی بھی شدید الفاظ میں مذمت کی اور بھارتی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنی مسلمان دشمنی پر مشتمل پالیسیوں سے باز آجائے۔اس مظاہرے میں اینٹورپن سے بھی ایک بڑے قافلے نے شرکت کی اور حضورۖ سے عقیدت و محبت کا اظہار کیا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button