پاکستان

بنگلہ دیش میں چینی کمپنی کی مددسے تیار طویل ترین پل عوام کے لیے کھول دیاگیا

ڈھاکہ(این این آئی)بنگلہ دیش میں آٹھ سال کے عرصے میں دریائے پدما پر تعمیر کردہ نیا طویل ترین پل باقاعدہ افتتاح کے ایک روز بعد عوامی آمد و رفت کے لیے کھول دیا گیا۔ اس پل کی لمبائی ساڑھے چھ کلومیٹر سے بھی زیادہ بنتی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق

یہ 6.51 کلومیٹر طویل پل تقریبا 3.6 بلین امریکی ڈالر کے برابر لاگت سے تعمیر کیا گیا۔اس عظیم الجثہ تعمیراتی منصوبے پر کام کے دوران حکومت کو سیاسی اپوزیشن کی طرف سے شدید تنقید اور کرپشن کے الزامات سمیت کئی طرح کے مسائل کا سامنا رہا۔ اس منصوبے میں کینیڈا کی ایک تعمیراتی کمپنی بھی شامل تھی اور پروجیکٹ پر پیش رفت کے دوران رشوت اور بدعنوانی کے الزامات اور دیگر اسکینڈلز کے باعث عالمی بینک سمیت کئی بین الاقوامی مالیاتی اداروں نے اس پل کی تعمیر کے لیے رقوم فراہم کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ ابتدائی منصوبہ بندی کے مطابق ورلڈ بینک کو اس منصوبے کے لیے 1.2 بلین ڈالر مہیا کرنا تھے۔بیرونی فنڈنگ سے انکار کے بعد ڈھاکہ حکومت کو اربوں ڈالر مالیت کا یہ منصوبہ ملکی مالی وسائل سے ہی مکمل کرنا پڑا۔ اس پل کی تعمیر اور اس کے استعمال میں آ جانے سے دارالحکومت ڈھاکہ اور ملک کی دوسری سب سے بڑی سمندری بندرگاہ مونگلہ کے مابین فاصلہ تقریبا 100 کلومیٹر کم ہو گیا ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button